سنا ہے عاشق خود غرض ہوتے ہیں۔

سنا ہے عاشق خود غرض ہوتے ہیں۔
کیونکہ اُن پر مُحبت کے اُصول فرض ہوتے ہیں۔
ایسے ہی نہیں رنگ پیلے ہوتے اِن کے ۔
اِن کو عشق کے مرض ہوتے ہیں۔
یار سے مُحبت کبھی ختم ہی نہیں ہوتی ۔
آخری سانس تک اس کے قرض ہوتے ہیں۔
شوق نہیں شاعری کرنے کا۔
بس دُکھ میں ایسے جُملے عرض ہوتے ہیں۔

Click here for download.

Leave a Comment